شہید کی خدمات

مرکزی جامع مسجد گلگت کی تعمیر

مرکزی جامع مسجد گلگت کی تعمیر

گلگت شہر کی بڑھتی ہوئی آبادی کو مدنظر رکھتے ہوئے شہید علامہ سید ضیاءالدین رضوی اعلی اللہ مقامہ نے نئی جامع مسجد کی تعمیر کے منصوبے پر غور شروع کیا اور اس حوالے سے اکابرین شہر کا ایک اجلاس بلایا۔ پرانی مسجد میں پندرہ سو...

مزید ...

دور دراز علاقوں میں علماء کو تبلیغ پر بھیجنا

شہید آغا سید ضیاءالدین رضوی ان دور دراز علاقوں میں جہاں لوگوں کے لئے علما میسر نہیں تھے وہاں پر نماز جماعت کے قیام اور دوسری دینی خدمات انجام دینے کے لئے خصوصی طور پر مبلغین کو بھیجتے تھے۔ ہر طریقے سے مبلغین کی حمایت کرتے...

مزید ...

برادران کے حوزوی مدرسوں کی سرپرستی

شہید آغا سید ضیاءالدین رضوی گلگت شہر میں برادران کے ایک حوزوی مدرسے کی سرپرستی کرتے تھے۔ بہت زیادہ مصروف ہونے کے باوجود طلاب کرام ایک درس کو سید کے گھر میں رکھتے تھے۔ اور شہید کسی بھی وقت درس کی چھٹی نہیں کرتے...

مزید ...

خواہران کے لئے حوزوی مدارس کا قیام

شہید علامہ سید ضیاءالدین رضوی اعلی اللہ مقامہ نے گلگت شہر میں خواہران کی دینی تربیت کے لئے جامعۃ الزہرا (سلام اللہ علیہا) کی بنیاد رکھی اسی طرح نومل، جلال آباد، ہنزہ، نگر اور دنیور میں بھی خواہران کے دینی مدارس کی سرپرستی...

مزید ...

دینیات سینٹرز کا قیام

شہید علامہ سید ضیاءالدین رضوی اعلی اللہ مقامہ نے گلگت، نگر، ہنزہ، جلال آباد، دنیور اور دوسر ے سینکڑوں دیہاتوں میں جوانوں کو دینی تعلیمات سے روشناس کرانے کے لئے کئی دینیات سینٹرز کی بنیاد رکھی ان سینٹروں میں اساتذہ کا بھی...

مزید ...
شہید کے مختلف شخصیتی پہلو

شہید کے مختلف شخصیتی پہلو

الف : شہید کی فردی خصوصیات : شہید سید ضیاء الدین رضوی سادگی کے ساتھ زندگی گزاتے تھے ۔انہیں ان کے والد بزرگوار کی طرف سے تھوڑی سی زمین وراثت میں ملی تھی۔ ان کی سادہ زیستی کی ایک مثال یہ ہے کہ جب انہوں نے ۱۹۹۰ میں جامع مسجد...

مزید ...
.
  • بدلہ نہ تیرے بعد بھی موضوع گفتگو
  • تو جاچکا ہے پھر بھی میری محفلوں میں ہے
  • زندہ قوموں کا ہمیشہ سے یہ شعار رہا ہے کہ وہ اپنے محسنین کو کبھی فراموش نہیں کرتے جس کی قربانی کی بدولت وہ دنیا کے نقشے پر ، پر وقار زندگی بسر کر رہے ہوتے ہیں ۔ زندہ قوموں کا کوئی فرد ایسا کارنامہ سر انجام دے تو اس کی یادیں کبھی دلوں سے محو نہیں ہوتیں بلکہ ان کی شخصیت ہر لمحہ تابندہ و جاودان رہتی ہے۔
  • شہید سید ضیاءالدین رضوی بھی ان محسنین میں سے ایک ہیں جن کو ملت تشیع پاکستان بالعموم اور ملت تشیع گلگت و بلتستان بلخصوص ہمیشہ یاد رکھے گی ،سید ضیاءالدین رضوی اک فرد کا نام نہیں بلکہ اک فکر ،اک جذبے ، اک حوصلے اور شعور کا نام ہے ۔ بقول قائد ملت جعفریہ :شہید ضیاءالدین رضوی اک فرد کا نام نہیں بلکہ اک پاکیزہ تحریک اور مشن کا نام ہے۔
  • شہید ضیاءالدین رضوی اک انسان کامل کا نمونہ اور ہمہ جہت شخصیت تھے جن کے زندگی کا ہر پہلو ہمارے لئے نمونہ عمل ہے ۔ چاہے وہ شہید کی زندگی کا سیاسی پہلو ہو،علمی یا اخلاقی پہلو ہو ، اجتماعی یا فردی پہلو ہو۔

ہمارے ساتھ رہیں